پی ایس او کو سی این جی انڈسٹری کے قیام سے ہی آئل مارکیٹنگ کمپنیوں میں قائدانہ مقام حاصل ہے۔ پی ایس او پہلی آئل مارکیٹنگ کمپنی ہے جس نے جنوری 1996میں ملک کا پہلا سی این جی اسٹیشن قائم کیا۔ اس وقت ملک بھر میں پی ایس او کے 257سی این جی اسٹیشنز کام کررہے ہیں یہ تعداد ملک میں کام کرنے والی آئل مارکیٹنگ کمپنیوں میں سب سے زیادہ ہے۔ ہم نے سی این جی انڈسٹری میں دیگر آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کے مقابلے میں اپنا نمایاں مقام برقرار رکھا ہے مالی سال 2012-13میں پی ایس او کا سی این جی انڈسٹری میں مارکیٹ شیئر 22.5فیصد ریکارڈ کیا گیا۔

حفاظتی اصولوں پر عمل درآمد کے لیے پی ایس او کے تمام سی این جی اسٹیشنز کا ایس ایس ای ماہرین اور خصوصی ایکوپمنٹ کے ذریعے باقاعدگی سے معائنہ کیا جاتا ہے۔ ہم ملک گیر سطح پر سالانہ بنیادوں پر سی این جی ٹریننگ سیمینارمنعقد کرتے ہیں۔ ان سیمینارز کے ذریعے سی این جی کے کاروبار سے متعلق تکنیکی اور حفاظتی اصولوں کے بارے میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں تاکہ پی ایس او کے سی این جی اسٹیشنز کو حادثات سے محفوظ رکھا جاسکے۔

سی این جی ایک عام اصطلاح ہے اس لیے صارفین کو پی ایس او سی این جی اسٹیشنز کی جانب راغب کرنے کے لیے برانڈ سے متعلق تشہیری سرگرمیوں کا انعقاد کیا جاتا ہیجن میں سی این جی کسٹمر کیئر ڈے سرفہرست ہے اس دن پاکستان بھر میں پی ایس او کے سی این جی اسٹیشنز پر مختلف تشہیری مہم منعقد کی جاتی ہیں۔ یہ سرگرمی برانڈ ایکویٹی بنانے کے ساتھ صارفین کے پی ایس او کے ساتھ تعلق کو مضبوط بنانے میں مدد دیتی ہے۔

.پاکستان میں سی این جی کے باحفاظت استعما ل کے رجحان کو فروغ دینے کے لیے پی ایس او کی ایک قابل قدر کاوش ’’سی این جی کسٹمر اویئرنیس کمپین ‘‘ ہے۔ ملک بھر کے سی این جی اسٹیشنز کے احاطے اور پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے چلائی جانے والی اس مہم کے ذریعے پی ایس او کی ٹیم صارفین کو سی این جی بھروانے، سی این جی کٹ اور سلنڈرز نصب کرانے کے دوران احتیاطی تدابیر کے بارے میں آگہی فراہم کرتا ہے اس طرح پی ایس او سی این جی سے متعلق حفاظتی اصولوں کی ترویج کے ذریعے عوامی سطح پر شعور اجاگر کرنے میں اپنا کردار ادا کررہی ہے۔

صارفین کو سی این جی کی درست مقدار فراہم کرنے کے لیے پی ایس او کی موبائل سی این جی کوانٹیٹی میژرمنٹ یونٹس ملک بھر میں کام کررہے ہیں۔ 

سی این جی کی خصوصیات:

  • سی این جی۔ کمپریسڈ نیچرل گیس(عمومی طور پر سوئی گیس کے نام سے مشہور ہے)
  • 8-16 پی ایس آئی سے 3600پی ایس آئی تک کمپریس کی جاتی ہے
  • میتھین CH4 
  • ہوا سے ہلکی ہوتی ہے

سی این جی کے فوائد:

  • ٹرانسپورٹ کے لیے ایک متبادل ماحول دوست ایندھن ہے
  • گاڑیوں کے لیے سیسے سے پاک فیول ہے
  • مضر صحت کاربن مونو آکسائڈ گیس کا اخراج 90فیصد تک کم ہوتا ہے
  • پیٹرول کے 455ڈگری درجہ حرارت کے اگنیشن ٹمپریچر کے مقابلے میں سی این جی کا اگنشین ٹمپریچر 704ڈگری ہوتا ہے
  • معاشی لحاظ سے بھی موزوں ہے

سی این جی کیوں استعمال کی جائے؟

پاکستان میں ٹرانسپورٹ سیکٹر کے لیے سی این جی کو بطور ایندھن متعارف کرائے جانے کا بنیادی مقصد مقامی سطح پر دستیاب قدرتی گیس کو بطور ایندھن استعمال کرنا تھا۔

  • سی این جی کے استعمال سے تیل کے درآمدی بل میں کمی ہوتی ہے
  • زرمبادلہ کی بچت ہوتی ہے
  • مقامی سطح پر دستیاب ہونے کی وجہ سے سی این جی کی سپلائی مستحکم اور محفوظ ہوتی ہے
  • مضبوط انفرااسٹرکچر
  • انرجی سیکیوریٹی
  • روایتی ایندھن کے مقابلے میں ماحول دوست ایندھن ہے